سپریم کورٹ نے بازار میں تیزی کے دوران سیبی اور سیٹ کو ہوشیار رہنے کی مشورت دی ہے۔

سپریم کورٹ نے بین الاقوامی سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن...

مرکزی حکومت کا الرٹ، وزارت صحت نے تمام ریاستوں کے لیے ایڈوائزری جاری کی

 مہاراشٹرا میں زیكا وائرس کے کچھ کیسز سامنے آنے...

بھارت-منگولیا مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ” میگھالیہ میں شروع

بھارت اور منگولیا کے مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ"...

ہاتھرس حادثے میں جاں بحق افراد کے لیے صدر اور وزیراعظم کی تعزیت

صدر دروپدی مرمو اور وزیراعظم نریندر مودی نے منگل...

راشٹریہ شکشک ایوارڈ کے لیے خود نامزدگی 15 جولائی تک: تعلیم وزارت

راشٹریہ شکشک ایوارڈ 2024 کے لیے اہل اساتذہ سے...

بھارت رابطہ کمیٹی کی پہلی تشکیل کا اجلاس شرد پوار کے گھر میں آج منعقد

‘انڈین نیشنل ڈیولپمنٹل انکلوسیو الائنس’ (I.N.D.I.A.) کی رابطہ کمیٹی (کوآرڈینیشن کمیٹی) کی پہلی میٹنگ آج بدھ 13 ستمبر کو ہوگی۔ مانا جا رہا ہے کہ اس میٹنگ کے ایجنڈے میں لوک سبھا انتخابات 2024 کے لیے مہم چلانے کی حکمت عملی پر ایک جامع بات چیت ہوگی۔

رابطہ کمیٹی میں اپوزیشن کی مختلف جماعتوں کے 14 رہنما شامل ہیں۔ کمیٹی کی میٹنگ شام کو این سی پی سربراہ شرد پوار کی رہائش گاہ پر ہوگی۔  ذرائع نے بتایا کہ کئی اپوزیشن جماعتوں کے رہنماؤں نے سیٹوں کی تقسیم کا فارمولہ جلد تیار کرنے کا مطالبہ کیا ہے، تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جا سکے کہ لوک سبھا سیٹوں پر بی جے پی کے امیدواروں کے خلاف اپوزیشن کا مشترکہ امیدوار کھڑا کیا جائے۔

میٹنگ سے پہلے، رابطہ کمیٹی کے رکن اور عام آدمی پارٹی کے لیڈر راگھو چڈھا نے کہا کہ لوگوں تک پہنچنے، مشترکہ ریلیوں کی منصوبہ بندی کرنے اور گھر گھر مہم چلانے جیسے مسائل پر تبادلہ خیال کیا جائے گا، جو ہر ریاست کے لیے مختلف ہوں گے۔راگھو چڈھا نے یہ بھی کہا کہ اس اتحاد کو کامیاب بنانے کے لیے اس میں شامل ہر سیاسی پارٹی کو تین چیزوں کی قربانی دینی ہو گی – عزائم، اختلاف اور رائے کا اختلاف۔

‘انڈیا’ اتحاد کی رابطہ کمیٹی کے اراکین میں کانگریس لیڈر کے سی وینوگوپال، ڈی ایم کے لیڈر ٹی آر بالو، جے ایم ایم لیڈر ہیمنت سورین، شیو سینا(یو بی ٹی) لیڈر سنجے راوت، آر جے ڈی لیڈر تیجسوی یادو،عآپ رہنما راگھو چڈھا، سماج وادی پارٹی لیڈر جاوید علی خان، جے ڈی یو  لیڈر لالن سنگھ، سی پی آئی لیڈر ڈی راجہ، نیشنل کانفرنس لیڈر عمر عبداللہ، پی ڈی پی لیڈر محبوبہ مفتی، ٹی ایم سی لیڈر ابھیشیک بنرجی اور سی پی آئی ایم  کے ایک رکن شامل ہیں ۔

ٹی ایم سی لیڈر ابھیشیک بنرجی کو بدھ (13 ستمبر) کو انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے پوچھ گچھ کے لیے بلایا ہے، اس لیے وہ میٹنگ میں شرکت نہیں کر پائیں گے، وہیں جے ڈی یو کے للن سنگھ خراب صحت کی وجہ سے میٹنگ میں شرکت نہیں کریں گے۔جے ڈی یو لیڈر اور بہار کے وزیر سنجے کمار جھا میٹنگ میں شرکت کریں گے۔ سی پی آئی-ایم نے ابھی تک اپنے کسی لیڈر کو اس کمیٹی کا رکن نامزد نہیں کیا ہے اور وہ میٹنگ میں موجود نہیں ہوگا۔ ذرائع کے مطابق 16-17 ستمبر کو ہونے والی  سی پی آئی ایم پولٹ بیورو کی میٹنگ میں پارٹی اتحاد میں اپنے ممبر کے بارے میں فیصلہ کرے گی۔

اجلاس میں آنے والے دنوں میں ہونے والی مہم اور ریلیوں کو حتمی شکل دینے پر بھی توجہ دی جائے گی۔ اس کے علاوہ رہنما رابطہ کمیٹی کے مختلف ذیلی گروپوں جیسے کہ مہم کمیٹی، ورکنگ گروپ آن  لائن میڈیا، ریسرچ اور سوشل میڈیا گروپ کے اجلاسوں میں کیے گئے فیصلوں پر نظر رکھیں گے۔