سپریم کورٹ نے بازار میں تیزی کے دوران سیبی اور سیٹ کو ہوشیار رہنے کی مشورت دی ہے۔

سپریم کورٹ نے بین الاقوامی سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن...

مرکزی حکومت کا الرٹ، وزارت صحت نے تمام ریاستوں کے لیے ایڈوائزری جاری کی

 مہاراشٹرا میں زیكا وائرس کے کچھ کیسز سامنے آنے...

بھارت-منگولیا مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ” میگھالیہ میں شروع

بھارت اور منگولیا کے مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ"...

ہاتھرس حادثے میں جاں بحق افراد کے لیے صدر اور وزیراعظم کی تعزیت

صدر دروپدی مرمو اور وزیراعظم نریندر مودی نے منگل...

راشٹریہ شکشک ایوارڈ کے لیے خود نامزدگی 15 جولائی تک: تعلیم وزارت

راشٹریہ شکشک ایوارڈ 2024 کے لیے اہل اساتذہ سے...

آسارام کو لگا جھٹکا، درخواست ضمانت پر سماعت سے سپریم کورٹ کا انکار

نئی دہلی: آسارام ​​کو سپریم کورٹ سے جھٹکا لگا ہے۔ عدالت عظمیٰ نے 2013 میں ایک نابالغ لڑکی کی عصمت دری کے معاملے میں مجرم قرار دیے گئے خود ساختہ بابا آسارام ​​باپو کی درخواست ضمانت پر غور کرنے سے انکار کر دیا۔

آسارام ​​کو 2013 میں ایک نابالغ لڑکی کی عصمت دری کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔ رپورٹ کے مطابق اس نے یہ جرم اگست 2013 میں جودھ پور کے منائی گاؤں میں کیا تھا۔ آسارام ​​کی گرفتاری کے بعد سورت کی دو خواتین نے بھی شکایت درج کروائی، جس میں الزام لگایا گیا کہ آسارام ​​اور ان کے بیٹے نے ان کے ساتھ 2002 اور 2005 کے درمیان عصمت دری کی۔

جودھ پور ریپ کا فوجداری مقدمہ 2014 میں شروع ہوا اور چار سال تک چلا، اسے ٹرائل کورٹ نے 2018 میں مجرم قرار دیا اور عمر قید کی سزا سنائی۔ اس کے خلاف اس کی اپیل ہائی کورٹ میں زیر التوا ہے۔