سپریم کورٹ نے بازار میں تیزی کے دوران سیبی اور سیٹ کو ہوشیار رہنے کی مشورت دی ہے۔

سپریم کورٹ نے بین الاقوامی سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن...

مرکزی حکومت کا الرٹ، وزارت صحت نے تمام ریاستوں کے لیے ایڈوائزری جاری کی

 مہاراشٹرا میں زیكا وائرس کے کچھ کیسز سامنے آنے...

بھارت-منگولیا مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ” میگھالیہ میں شروع

بھارت اور منگولیا کے مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ"...

ہاتھرس حادثے میں جاں بحق افراد کے لیے صدر اور وزیراعظم کی تعزیت

صدر دروپدی مرمو اور وزیراعظم نریندر مودی نے منگل...

راشٹریہ شکشک ایوارڈ کے لیے خود نامزدگی 15 جولائی تک: تعلیم وزارت

راشٹریہ شکشک ایوارڈ 2024 کے لیے اہل اساتذہ سے...

’نہ کروں گا، نہ کرنے دوں گا‘، ویتنام میں بائیڈن کے خطاب کے بعد جے رام رمیش کا وزیر اعظم پر حملہ

جی 20 سربراہی اجلاس کے موقع پر دہلی آنے والے امریکی صدر جو بائیڈن ہندوستان کے دورے کے بعد ویتنام پہنچ گئے اور پریس سے خطاب بھی کیا۔ بائیڈن نے ایک بیان میں کہا کہ انہوں نے  وزیر عظم  مودی سے انسانی حقوق اور آزاد صحافت کے بارے میں بات کی۔ کانگریس جنرل سکریٹری جے رام رمیش نے اس پر حکومت پر حملہ کیا ہے۔ انہوں نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ‘X’ پر پی ایم مودی پر بڑا طنز کیا ہے۔

امریکی صدر جو بائیڈن ویتنام پہنچ گئے اور پریس کانفرنس سے خطاب کیا۔ وہاں انہوں نے کہا، ‘میں نے بھارتی وزیر اعظم مودی کے ساتھ انسانی حقوق کے احترام کی اہمیت اور ایک مضبوط خوشحال ملک کی تعمیر میں سول سوسائٹی اور آزاد صحافت کے اہم کردار پر بات کی۔’ اب جے رام رمیش نے بائیڈن کے اس بیان پر پی ایم مودی کو نشانہ بنایا۔

کانگریس جنرل سکریٹری جے رام رمیش نے کہا، ‘پی ایم مودی بائیڈن سے کہہ رہے تھے کہ وہ نہ تو پریس کانفرنس کرونگا اور نہ ہی کرنے دونگا۔’  انہوں نے کہا کہ اس کا کوئی اثر نہیں ہوا۔

جےرام رمیش نے یہ بھی الزام لگایا کہ امریکی صدر جو بائیڈن کی ٹیم کو جی 20 سربراہی اجلاس سے قبل میڈیا سے بات کرنے اور پی ایم مودی کے ساتھ ان کی ملاقات کے بارے میں جواب دینے کی اجازت نہیں دی گئی۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ یہ حیرت کی بات نہیں ہے کیونکہ پی ایم مودی کے دور حکومت میں جمہوریت اسی طرح کام کرتی ہے۔