سپریم کورٹ نے بازار میں تیزی کے دوران سیبی اور سیٹ کو ہوشیار رہنے کی مشورت دی ہے۔

سپریم کورٹ نے بین الاقوامی سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن...

مرکزی حکومت کا الرٹ، وزارت صحت نے تمام ریاستوں کے لیے ایڈوائزری جاری کی

 مہاراشٹرا میں زیكا وائرس کے کچھ کیسز سامنے آنے...

بھارت-منگولیا مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ” میگھالیہ میں شروع

بھارت اور منگولیا کے مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ"...

ہاتھرس حادثے میں جاں بحق افراد کے لیے صدر اور وزیراعظم کی تعزیت

صدر دروپدی مرمو اور وزیراعظم نریندر مودی نے منگل...

راشٹریہ شکشک ایوارڈ کے لیے خود نامزدگی 15 جولائی تک: تعلیم وزارت

راشٹریہ شکشک ایوارڈ 2024 کے لیے اہل اساتذہ سے...

مدھیہ پردیش: نشے میں ڈوبا کانسٹیبل ’ڈائل 100‘ میں ڈیوٹی کرنے پہنچا، لوگوں کا ہنگامہ

مدھیہ ردیش کے ساگر میں خاکی کو شرمسار کر دینے والا معاملہ سامنے آیا ہے۔ نشے میں ڈوبا ایک پولیس اہلکار ڈائل 100 میں ڈیوٹی کرنے پہنچ گیا جس سے عجیب و غریب حالات پیدا ہو گئے۔ بتایا جا رہا ہے کہ جس گاری میں شرابی پولیس اہلکار موجود تھا، اس کا ڈرائیور موقع سے فرار ہو گیا۔ ڈائل 100 کی ڈیوٹی پر تعینات ہیڈ کانسٹیبل جتیندر ٹھاکر نشے میں ڈوبے تنہا ہی رہ گیا۔ جب لوگوں کو راستے سے نکلنے میں پریشانی ہوئی تو احتجاج شروع ہو گیا، لیکن شراب کے نشے میں ڈوبے پولیس اہلکار پر کوئی اثر نہیں پڑا۔ الٹا وہ لوگوں سے بحث کرنے لگا۔ ہنگامہ دیکھ کر موقع پر مقامی لوگوں کی بھیڑ جمع ہو گئی۔

ہنگامہ کے دوران شراب کے نشے میں ہیڈ کانسٹیبل کی کسی نے ویڈیو بنا لی اور سوشل میڈیا پر ڈال دی۔ پورے معاملے مین رہلی تھانہ انچارج ونود ونایک کرکرے کا بیان سامنے آیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ ڈائل 100 کی گاڑی اور ڈیوٹی پر تعینات ہیڈ کانسٹیبل کو بھیجا گیا تھا۔ دونوں گاڑی کھڑی کر کے بستی میں گئے تھے۔ اسی دوران نشے کی حالت میں جتیندر ٹھاکر آ کر گاڑی میں بیٹھ گئے، جبکہ ان کی گاڑی میں ڈیوٹی نہیں تھی۔ تھانہ انچارج کے مطابق ہیڈ کانسٹیبل کی تھانے میں بھی غیر حاضری درج کی گئی تھی۔ ہیڈ کانسٹیبل زبردستی آ کر گاڑی میں بیٹھ گئے تھے۔