مختار انصاری کے قریبی سنجیو جیوا کا عدالت کے اندر گولی مار کر قتل

لکھنؤ کی ایک عدالت کے اندر مختار انصاری کے قریبی سنجیو جیوا کا گولی مار کر قتل کر دیا گیا، تین دیگر لوگوں کو بھی لگی گولی

لکھنؤ: مغربی اترپردیش کے شاطر بدمعاش سنجیو مہیشور عرف جیوا پر لکھنؤ کی ضلع عدالت احاطے میں گولی مار کر قتل کردیا گیا۔ اسے مردہ حالت میں اسپتال لے جایا گیا۔

پولیس ذرائع نے بتایا کہ وکیل کے لباس میں آئے حملہ آوروں نے جیوا پر پیچھے سے ایک کے بعد ایک کئی گولیاں اس وقت چلائی گئیں جب وہ کسی معاملے میں پیشی پر آیا تھا۔ ذرائع کے مطابق حملہ آوروں نے پانچ سے چھ راونڈ فائرنگ کی۔ جیوا کو نزدیکی اسپتال میں داخل کرایا گیا۔ پولیس افسر کچھ بھی کہنے سے پرہیز کررہے ہیں لیکن مصدقہ ذرائع کے مطابق ڈاکٹروں نے جیوا کو مردہ قرار دے دیا ہے۔

حملہ آوروں کو پولیس نے گرفتار کرلیا ہے۔ اس گولی باری میں ایک بچی کو بھی گولی لگنے کی اطلاع ہے۔ اس واردات کے بعد عدالتی احاطے میں افراتفری مچ گئی۔ کچہری احاطے میں موجود وکیلوں نے واقعہ کے تئیں احتجاج کرتے ہوئے خود کی سیکورٹی کا مطالبہ کیا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ جیوا کا مختار انصاری سے کافی نزیکی تعلقات تھے۔