سینسیکس اور نفٹی میں گراوٹ جاری

سینسیکس اور نفٹی آج مسلسل پانچویں دن نیچے بند ہوئے، سینسیکس 37.70 پوائنٹس گر کر 57107.52 پوائنٹس اور این ایس ای کا نفٹی 8.90 پوائنٹس گر کر 1707.40 پوائنٹس پر آگیا

ممبئی: عالمی سطح پر تیزی کے باوجود مالیاتی خدمات، یوٹیلیٹیز، بینکنگ، دھاتیں، صارفین کے پائیدار اشیاء، کیپٹل گڈس اور مقامی سطح پر بجلی سمیت گیارہ گروپوں میں فروخت کی وجہ سے سینسیکس اور نفٹی آج مسلسل پانچویں دن نیچے بند ہوئے۔

بی ایس ای کا تیس حصص کا حساس انڈیکس سینسیکس 37.70 پوائنٹس گر کر 57107.52 پوائنٹس اور نیشنل اسٹاک ایکسچینج (این ایس ای) کا نفٹی 8.90 پوائنٹس گر کر 1707.40 پوائنٹس پر آگیا۔ تاہم، بی ایس ای کی درمیانی اور چھوٹی کمپنیوں میں خریداری نے مارکیٹ کو مزید گرنے سے بچا لیا۔ مڈ کیپ 0.01 فیصد بڑھ کر 24,554.00 پوائنٹس اور اسمال کیپ 0.49 فیصد بڑھ کر 27,990.87 پوائنٹس پر پہنچ گیا۔

اس دوران بی ایس ای پر کل 3540 کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا جن میں سے 1868 خریدے گئے اور 1539 فروخت ہوئے جبکہ 133 میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی۔ اسی طرح این ایس ای پر 28 کمپنیوں میں اضافہ ہوا جبکہ باقی 22 میں کمی ہوئی۔

بی ایس ای کے 11 گروپوں میں فروخت کا دباؤ تھا۔ جس کی وجہ سے کموڈٹیز 0.22، فنانشل سروسز 0.56، انڈسٹریل 0.39، یوٹیلیٹیز 0.59، آٹو 0.34، بینکنگ 0.78، کیپٹل گڈز 0.71، کنزیومر ڈیوربلز 0.55، میٹلز 0.83، پاور 0.58 فیصد اور ریئل گروپ 0.58 فیصد گر گئے۔

دوسری جانب آئل اینڈ گیس 1.24، ٹیلی کام 0.73، آئی ٹی 0.67، ٹیک 0.75، ہیلتھ کیئر 0.69 اور انرجی گروپ کے 0.91 کے اضافے سے مارکیٹ مضبوط ہوئی۔

اس دوران بین الاقوامی سطح پر تیزی کا رجحان رہا۔ جرمنی کا ڈعیکس 0.34، جاپان کا نکئی 0.53، ہانگ کانگ کے ہینگ سینگ میں 0.03 اور چین کے شنگھائی کمپوزٹ میں 1.40 فیصد اضافہ ہوا، جب کہ برطانیہ کے ایف ٹی ایس ای میں 0.36 کی کمی ہوئی۔