سپریم کورٹ نے بازار میں تیزی کے دوران سیبی اور سیٹ کو ہوشیار رہنے کی مشورت دی ہے۔

سپریم کورٹ نے بین الاقوامی سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن...

مرکزی حکومت کا الرٹ، وزارت صحت نے تمام ریاستوں کے لیے ایڈوائزری جاری کی

 مہاراشٹرا میں زیكا وائرس کے کچھ کیسز سامنے آنے...

بھارت-منگولیا مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ” میگھالیہ میں شروع

بھارت اور منگولیا کے مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ"...

ہاتھرس حادثے میں جاں بحق افراد کے لیے صدر اور وزیراعظم کی تعزیت

صدر دروپدی مرمو اور وزیراعظم نریندر مودی نے منگل...

راشٹریہ شکشک ایوارڈ کے لیے خود نامزدگی 15 جولائی تک: تعلیم وزارت

راشٹریہ شکشک ایوارڈ 2024 کے لیے اہل اساتذہ سے...

ترنمول کانگریس نے گورنر کی سخت تنقید کرتے ہوئے دہلی سے واپس نہ آنے کی اپیل کی

بنگال کے گورنر اور ممتا حکومت کے درمیان تعلقات انتہائی کشیدہ ہیں۔ اس وقت گورنر چار روزہ دہلی دورے پر ہیں۔ تاہم دہلی دورے کی کوئی وجہ انہوں نے بیان نہیں کی ہے۔ ترنمول کانگریس کی ممبر پارلیمنٹ مہو مترا نے مزاحیہ انداز میں ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ انکل گورنر جی دہلی گئے ہیں مگر ہماری ان سے درخواست ہے کہ وہ دہلی سے واپس نہ آئیں۔

کلکتہ: دہلی کے دورے پر گئے مغربی بنگال گورنر کی سخت تنقید کرتے ہوئے ترنمول کانگریس نے کہا ہے کہ وہ مسلسل آئینی اصولوں کی خلاف ورزی کررہے ہیں اور اب انہیں دہلی سے کلکتہ واپس نہیں آنا چاہیے۔

دوسری طرف بی جے پی نے الزام عائد کیا ہے کہ ترنمول کانگریس آئین کا احترام نہیں کررہی ہے۔ممتا بنرجی کی زیر قیادت پارٹی کو آئینی عہدوں کا احترام کرنا چاہیے۔ بنگال کے گورنر اور ممتا حکومت کے درمیان تعلقات انتہائی کشیدہ ہیں۔ اس وقت گورنر چار روزہ دہلی دورے پر ہیں۔ تاہم دہلی دورے کی کوئی وجہ انہوں نے بیان نہیں کی ہے۔ گورنر نے آج ٹویٹ کرتے ہوئے اطلاع دی ہے کہ انہوں نے مرکزی وزراء پرہلاد جوشی اور پرہلاد سنگھ پٹیل سے ملاقات کی۔ مرکزی وزیر کوئلہ اور پارلیمانی امور کے ساتھ میٹنگ کافی مفید تھی اور ان سے مختلف امور پر بات چیت ہوئی ہے۔

سینئر ترنمول لیڈر اور پارٹی کی ترجمان سوگتا رے نے مسٹر دھنکر پر الزام لگایا کہ گورنر نے حالیہ مختلف فیصلوں اور بیانات پر ریاستی حکومت کو اعتماد میں نہیں لیا ہے۔ ہم نے کبھی بھی ایسا گورنر نہیں دیکھا جس کو آئین اور اس کے اصولوں کا کوئی احترام نہ ہو۔ وہ ہر آئینی اصول کی خلاف ورزی کر رہے ہیں۔ ہمارے آئین کے مطابق وزار کونسل جس کی سربراہی وزیراعلیٰ کرتی ہیں کی ہدایت کے مطابق گورنر کام کرتے ہیں۔ مگر گورنر کسی بھی اصول کی پابندی کرنے کے بجائے اپنی خواہشات اور پسندیدوں کے مطابق کام کرتے ہیں۔ وہ دہلی جاکر مرکزی وزرا سے ملاقات کررہے ہیں۔

ترنمول کانگریس کی ممبر پارلیمنٹ مہو مترا نے مزاحیہ انداز میں ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ انکل گورنر جی دہلی گئے ہیں مگر ہماری ان سے درخواست ہے کہ وہ دہلی سے واپس نہ آئیں۔

خیال رہے کہ بی جے پی کے اراکین اسمبلی کے ایک وفد سے ملاقات کرنے کے ایک دن بعد گورنر دہلی کے لئے روانہ ہوئے ہیں۔ دہلی روانہ ہونے سے قبل گورنر نے وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی کو خط لکھ کر کہا کہ انتخابات کے نتائج کے بعد مسلسل تشدد کے واقعات ہورہے ہیں مگر حکومت اس پر قابو پانے کے بجائے مسلسل خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں۔ گورنر نے اس خط کو شیئر بھی کیا۔ محکمہ داخلہ نے مسٹر دھنکر کے اس قدم کی سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ گورنر نے غلط اعداد و شمار پیش کئے ہیں اور خط کو عام کرنا متعین کرنا اصول کی خلاف ورزی ہے۔

مغربی بنگال کے بی جے پی کے جنرل سکریٹری سیانتن باسو نے مسٹر دھنکر کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ ترنمول کانگریس آئینی عہدوں کا احترام نہیں کررہی ہے۔ مسٹر دھنکر نے غیر آئینی کچھ نہیں کیا۔ وہ اصول کے مطابق کام کر رہے ہیں۔ یہ ترنمول کانگریس اور ریاستی حکومت ہے جو ہر طرح کے غیر آئینی کام کرتی رہی ہے۔ اصولوں کے بارے میں بات کرنے سے پہلے ترنمول کانگریس کو پہلے کرسی کا احترام کرنا سیکھنا چاہئے۔