سپریم کورٹ نے بازار میں تیزی کے دوران سیبی اور سیٹ کو ہوشیار رہنے کی مشورت دی ہے۔

سپریم کورٹ نے بین الاقوامی سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن...

مرکزی حکومت کا الرٹ، وزارت صحت نے تمام ریاستوں کے لیے ایڈوائزری جاری کی

 مہاراشٹرا میں زیكا وائرس کے کچھ کیسز سامنے آنے...

بھارت-منگولیا مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ” میگھالیہ میں شروع

بھارت اور منگولیا کے مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ"...

ہاتھرس حادثے میں جاں بحق افراد کے لیے صدر اور وزیراعظم کی تعزیت

صدر دروپدی مرمو اور وزیراعظم نریندر مودی نے منگل...

راشٹریہ شکشک ایوارڈ کے لیے خود نامزدگی 15 جولائی تک: تعلیم وزارت

راشٹریہ شکشک ایوارڈ 2024 کے لیے اہل اساتذہ سے...

ووٹنگ کے حقوق پر حملے کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی: بائیڈن

امریکی صدر جو بائیڈن نے ملک میں ووٹنگ کے حقوق پر حملے کی مذمت کی ہے اور کہا ہے کہ جون میں ان کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی۔

واشنگٹن: امریکی صدر جو بائیڈن نے ملک میں ووٹنگ کے حقوق پر حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ جون میں اس کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی۔

بائیڈن نے منگل کے روز اوکلاہوما کے ٹلسا میں تقریر کے دوران کہا ’’ہمیں سنہ 2020 میں ووٹنگ کے حقوق پر حملے کا سامنا کرنا پڑا۔ پابندیوں، مقدمات، دھمکیوں اور رائے دہندگان کو ہراساں کر کے ایسا کیا گیا تھا۔ غیر جانبدارانہ انتخابی منتظمین کے تبادلے کی کوشش کی گئی اور انتخابی نتائج سے متعلق صحیح معلومات سامنے لانے والوں کو ڈرانے کی کوشش کی گئی۔ یہ واقعی ہماری جمہوریت پر حملہ تھا۔

امریکی صدر نے کہا کہ اس وقت ایوان نمائندگان جان لیوس ووٹنگ رائٹس ایکٹ پر کام کر رہے ہیں۔ یہ قانون حق رائے دہی کے حقوق پر نئے حملوں کو روکنے کے لئے ’ایک نیا قانونی آلہ‘ کے طور پر ایک اہم اقدام ہے۔