سپریم کورٹ نے بازار میں تیزی کے دوران سیبی اور سیٹ کو ہوشیار رہنے کی مشورت دی ہے۔

سپریم کورٹ نے بین الاقوامی سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن...

مرکزی حکومت کا الرٹ، وزارت صحت نے تمام ریاستوں کے لیے ایڈوائزری جاری کی

 مہاراشٹرا میں زیكا وائرس کے کچھ کیسز سامنے آنے...

بھارت-منگولیا مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ” میگھالیہ میں شروع

بھارت اور منگولیا کے مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ"...

ہاتھرس حادثے میں جاں بحق افراد کے لیے صدر اور وزیراعظم کی تعزیت

صدر دروپدی مرمو اور وزیراعظم نریندر مودی نے منگل...

راشٹریہ شکشک ایوارڈ کے لیے خود نامزدگی 15 جولائی تک: تعلیم وزارت

راشٹریہ شکشک ایوارڈ 2024 کے لیے اہل اساتذہ سے...

مدراس ہائی کورٹ نے کورونا کی دوسری لہر کے لئے الیکشن کمیشن کو تنہا ذمہ دار ٹھہرایا

مدراس ہائی کورٹ نے ملک میں کورونا وبا کی دوسری لہر کے لئے الیکشن کمیشن کو مکمل طور پر ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔ اس نے سیاسی جلسوں پر پابندی نہ لگانے کے لئے الیکشن کمیشن کو مورد الزام قرار دیا ہے۔

چنئی: مدراس ہائی کورٹ نے ملک میں کورونا وبا کے دوسری لہر کے لئے الیکشن کمیشن کو تنہا ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔ اس نے سیاسی جلسوں پر پابندی عائد نہ کرنے پر الیکشن کمیشن کو ذمہ دار قرار دیا ہے۔ عدالت نے پیر کو یہ انتباہ بھی دیا کہ اگر الیکشن کمیشن کورونا کے رہنما خطوط پر سختی سے عمل پیرا ہونے کو یقینی نہیں بناتا ہے تو عدالت 2 مئی کو ووٹوں کی گنتی روکنے پر مجبور ہوگی۔

وزیر ٹرانسپورٹ ایم آر وجے باسکر نے اس سلسلے میں ایک درخواست دائر کی تھی جس میں الیکشن کمیشن سے درخواست کی گئی تھی کہ وہ سخت حفاظتی اقدامات کو یقینی بنانے اور ووٹوں کی منصفانہ گنتی کو یقینی بنانے کے لئے ایک گائیڈ لائن جاری کرے۔

چیف جسٹس سنجیو بنرجی اور جسٹس سینتھل کمار رامامورتی نے 6 اپریل کو ہونے والے مرحلہ 1 کے انتخابات کے دوران سیاسی جماعتوں کو دانستہ طور پر انتخابی جلسوں میں کورونا کے رہنما خطوط کی خلاف ورزی کرنے سے نہ روکنے کے لئے الیکشن کمیشن کی زبردست کھینچائی کی۔