سپریم کورٹ نے بازار میں تیزی کے دوران سیبی اور سیٹ کو ہوشیار رہنے کی مشورت دی ہے۔

سپریم کورٹ نے بین الاقوامی سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن...

مرکزی حکومت کا الرٹ، وزارت صحت نے تمام ریاستوں کے لیے ایڈوائزری جاری کی

 مہاراشٹرا میں زیكا وائرس کے کچھ کیسز سامنے آنے...

بھارت-منگولیا مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ” میگھالیہ میں شروع

بھارت اور منگولیا کے مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ"...

ہاتھرس حادثے میں جاں بحق افراد کے لیے صدر اور وزیراعظم کی تعزیت

صدر دروپدی مرمو اور وزیراعظم نریندر مودی نے منگل...

راشٹریہ شکشک ایوارڈ کے لیے خود نامزدگی 15 جولائی تک: تعلیم وزارت

راشٹریہ شکشک ایوارڈ 2024 کے لیے اہل اساتذہ سے...

تلنگانہ: پرائیویٹ اسکول کے اساتذہ کا کلکٹریٹ کریم نگر کے سامنے دھرنا

اساتذہ کی جے اے سی کی جانب سے یہ دھرنا دیا گیا، جس میں سینکڑوں کی تعداد میں اساتذہ نے حصہ لیتے ہوئے حکومت کے اس قدم کی شدید مخالفت کی اور یہ سوال کیا کہ پرائیویٹ اسکول کو بند کرنے سے کورونا کی روک تھام ممکن ہے تو پھر شراب خانے کیوں بند نہیں کئے گئے۔ ان سے بھی کورونا پھیل سکتا ہے۔

حیدرآباد: کورونا کی روک تھام کے لئے پرائیویٹ تعلیمی اداروں کو بند کرنے کے تلنگانہ حکومت کے اقدام کے خلاف کریم نگر ضلع کلکٹریٹ کے سامنے پرائیویٹ اسکول کے اساتذہ نے دھرنا دیا۔

اساتذہ کی جے اے سی کی جانب سے یہ دھرنا دیا گیا، جس میں سینکڑوں کی تعداد میں اساتذہ نے حصہ لیتے ہوئے حکومت کے اس قدم کی شدید مخالفت کی اور یہ سوال کیا کہ پرائیویٹ اسکول کو بند کرنے سے کورونا کی روک تھام ممکن ہے تو پھر شراب خانے کیوں بند نہیں کئے گئے۔ ان سے بھی کورونا پھیل سکتا ہے۔

انہوں نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اسکولس کو بند کرنے کی وجہ سے وہ سڑکوں پر آگئے ہیں۔ دھرنے کے موقع پر شدید گرمی کے نتیجہ میں جیوتی نامی ٹیچر اچانک گر گئی۔ اس کی ساتھی اساتذہ نے اس کو سڑک سے اٹھایا۔ اساتذہ نے اپنے ہاتھوں میں پلے کارڈس تھامتے ہوئے حکومت کے خلاف اور اپنے مطالبہ کی حمایت میں نعرے بازی کی۔