سپریم کورٹ نے بازار میں تیزی کے دوران سیبی اور سیٹ کو ہوشیار رہنے کی مشورت دی ہے۔

سپریم کورٹ نے بین الاقوامی سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن...

مرکزی حکومت کا الرٹ، وزارت صحت نے تمام ریاستوں کے لیے ایڈوائزری جاری کی

 مہاراشٹرا میں زیكا وائرس کے کچھ کیسز سامنے آنے...

بھارت-منگولیا مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ” میگھالیہ میں شروع

بھارت اور منگولیا کے مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ"...

ہاتھرس حادثے میں جاں بحق افراد کے لیے صدر اور وزیراعظم کی تعزیت

صدر دروپدی مرمو اور وزیراعظم نریندر مودی نے منگل...

راشٹریہ شکشک ایوارڈ کے لیے خود نامزدگی 15 جولائی تک: تعلیم وزارت

راشٹریہ شکشک ایوارڈ 2024 کے لیے اہل اساتذہ سے...

بینک نجکاری کی تجویز کے خلاف 15 اور 16 مارچ کو ملک گیر ہڑتال

بھوپال کے یونائیٹڈ فورم آف بینک یونین کے کوآرڈینیٹر وی کے شرما نے آج یہاں بتایا کہ یہ فورم بینکوں کے افسران اور ملازمین کی نو تنظیموں پر مشتمل ہے اور سب نے ہڑتال میں شامل ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔

بھوپال: مرکزی بجٹ میں بینکوں کی نجکاری کی تجویز کے خلاف یونائیٹڈ فورم آف بینک یونین کی اپیل پر 15 اور 16 مارچ کو ملک گیر بینک ہڑتال کے تحت مدھیہ پردیش میں تقریبا 5 ہزار بینک برانچوں کے 40 ہزار افسران اور ملازمین ہڑتال پر رہیں گے۔ اس کی وجہ سے بینکوں کے کام کاج مکمل طور پر ٹھپ رہنے کی امید ہے۔

بھوپال کے یونائیٹڈ فورم آف بینک یونین کے کوآرڈینیٹر وی کے شرما نے آج یہاں بتایا کہ یہ فورم بینکوں کے افسران اور ملازمین کی نو تنظیموں پر مشتمل ہے اور سب نے ہڑتال میں شامل ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔

مسٹر شرما نے کہا کہ پیر اور منگل کی ہڑتال کی وجہ سے بینکوں میں کام کاج مکمل طور پر ٹھپ رہے گا۔  اس دوران، ریاست کی تقریبا پانچ ہزار شاخوں کے 40 ہزار آفیسر اور ملازمین شامل ہوں گے۔ اس میں بھوپال کی تقریبا پانچ سو شاخوں کے پانچ ہزار آفیسر اور ملازمین بھی شامل ہیں۔

اسے بھی پڑھیں:

ایل آئی سی کے حکام اور ملازمین 15 مارچ کو کریں گے احتجاج