سپریم کورٹ نے بازار میں تیزی کے دوران سیبی اور سیٹ کو ہوشیار رہنے کی مشورت دی ہے۔

سپریم کورٹ نے بین الاقوامی سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن...

مرکزی حکومت کا الرٹ، وزارت صحت نے تمام ریاستوں کے لیے ایڈوائزری جاری کی

 مہاراشٹرا میں زیكا وائرس کے کچھ کیسز سامنے آنے...

بھارت-منگولیا مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ” میگھالیہ میں شروع

بھارت اور منگولیا کے مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ"...

ہاتھرس حادثے میں جاں بحق افراد کے لیے صدر اور وزیراعظم کی تعزیت

صدر دروپدی مرمو اور وزیراعظم نریندر مودی نے منگل...

راشٹریہ شکشک ایوارڈ کے لیے خود نامزدگی 15 جولائی تک: تعلیم وزارت

راشٹریہ شکشک ایوارڈ 2024 کے لیے اہل اساتذہ سے...

متھن چکرورتی نے بی جے پی میں شمولیت اختیار کی

متھن چکرورتی اپنے طالب علمی کے دور میں سی پی آئی ایم ایل سے وابستہ رہے۔ بائیں محاذ کے 34 سالہ دور اقتدار میں وہ سی پی ایم کے قریبی تھے۔ ممتا بنرجی کے اقتدار میں آنے کے بعد ترنمول کانگریس کے قریبی ہوگئے، مگر اب ایک بار پھر وہ بی جے پی کا دامن تھام لیا ہے۔

کلکتہ: بالی ووڈ اداکار متھن چکرورتی نے آج وزیرا عظم نریندر مودی کے بریگیڈ ریلی اپ میں بی جے پی میں شامل ہوئے۔ تاہم انہوں نے سیاسی جماعت تبدیل کرنے کے معاملے میں سیاست دانوں کو پیچھے چھوڑ دیا ہے۔

متھن چکرورتی اپنے طالب علمی کے دور میں سی پی آئی ایم ایل سے وابستہ رہے۔ بائیں محاذ کے 34 سالہ دور اقتدار میں وہ سی پی ایم کے قریبی تھے۔ سی پی آئی ایم کے سابق لیڈر سبھاش چکرورتی سے ان کی قربت مشہور تھی ۔ان کے انتقال کے بعد انہوں نے ان کی اہلیہ رملا چکرورتی کے لئے مہم بھی چلائی مگر ممتا بنرجی کے اقتدار میں آنے کے بعد ترنمول کانگریس کے قریبی ہوگئے، انہیں پارٹی نے راجیہ سبھا میں جگہ دی۔ مگر شاردا چٹ فنڈ گھوٹالہ میں نام آنے کے بعد وہ راجیہ سبھا کی رکنیت سے یہ کہتے ہوئے استعفیٰ دے دیا کہ وہ سیاست سے کنارہ کش ہو رہے ہیں مگر اب ایک بار پھر وہ بی جے پی کا دامن تھام لیا ہے۔

کولکتہ: متھن چکرورتی ٹیم کی تبدیلی کی فہرست کا مظہر بن گئے ہیں۔ بنگالی ‘مہاگورو’ ممبئی کا تعجب اتوار سے ختم ہو چکا ہے۔ اس سے قبل، اس نے گلے میں سرخ مفلر پہنا تھا، جب وہ سی پی آئی ایم کا مبلغ تھا۔ بعد میں، ترنمول راجیہ سبھا کے رکن پارلیمنٹ پارٹی چھوڑ کر مودی کے پیچھے چل پڑے۔
بالکل تتلی تیراکی. میتھون چکرورتی نے مضبوط تال کے ساتھ پارٹیوں کو تبدیل کرنے کی سیاست میں بھی پیشہ ور سیاستدانوں کو حیرت میں ڈال دیا ہے۔

70 سالہ متھن چکرورتی نے کہا کہ آپ لوگوں نے مجھ پر بھروسہ کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ میں کوئی چھوٹا سانپ نہیں ہوں میں اژگر ہوں، جس پر حملہ کرتا ہوں وہ بچ نہیں پاتا ہے۔