ٹرمپ کی ٹویٹ کی دوسری کوشش ٹوئٹر انتظامیہ نے بنادی ناکام، ٹوئٹر اکاؤنٹ مستقل طور پر بلاک

موجودہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے کئے گئے ٹوئٹس کو ٹوئٹر نے فوری طور پر بلاک کردیا ہے اور اکاؤنٹ کو مستقل طور پر بند کردیا گیا ہے۔

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی دوسرے سرکاری اکاؤنٹ ’پوٹس‘ سے ٹویٹ کی کوشش ٹوئٹر نے ناکام بنادی۔ امریکی صدر کی جانب سے کئے گئے ٹوئٹس کو ٹوئٹر نے فوری طور پر بلاک کردیا۔ ڈونلڈ ٹرمپ کا اکاؤنٹ مستقل طور پر بند کردیا گیا ہے۔

ٹوئٹر انتظامیہ کے مطابق پوٹس اکاؤنٹ سے شیئر کی گئی متعدد ٹوئٹس کو فوری بلاک کردیا گیا ہے۔

ٹرمپ کی جانب سے ’پوٹس‘ اکاؤنٹ سے شیئر کی گئی ٹوئٹس میں ٹرمپ نے ٹیک کمپنی، ڈیموکریٹس پر تنقید کی تھی۔ ٹرمپ کے ٹویٹ میں کہا ٹوئٹر کا پابندی لگانا کمیونیکیشن ایکٹ 230 کی خلاف ورزی ہے۔

ٹرمپ کا نومنتخب صدر جو بائیڈن کی حلف برداری کی تقریب میں شرکت سے انکار

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنی ٹوئٹس میں نومنتخب صدر جو بائیڈن کی حلف برداری کی تقریب میں شرکت سے انکار کیا تھا۔ امریکی ایوان نمائندگان نے جو بائیڈن کی بطور امریکی صدر فتح کی توثیق کردی ہے اور اب ٹرمپ کے اقتدار کے چند روز ہی باقی ہیں۔

امریکی صدر نے ٹویٹ میں کہا کہ 20 جنوری کو نئے صدر کی تقریب حلف برداری میں شرکت نہیں کریں گے۔

موجودہ امریکی صدر کی نومنتخب صدر کی تقریب حلف برداری میں جانے سے انکار کے بعد یہ امریکہ کی 152 سالہ تاریخ میں پہلی بار ہوگا کہ کسی نے اپنے پیش رو کی تقریب میں شرکت نہ کی ہو۔

خیال رہے کہ امریکہ کے نو منتخب صدر جو بائیڈن 20 جنوری کو عہدے کا حلف لیں گے۔

ڈونلڈ ٹرمپ کا ٹوئٹر اکاؤنٹ مستقل طور پر بلاک

امریکہ سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق ٹوئٹر انتظامیہ کے مطابق فسادات کو مزید بڑھاوا دینے کے خدشے کے پیش نظر ڈونلڈ ٹرمپ کا اکاؤنٹ بند کیا گیا ہے۔

اس سے قبل 7 جنوری کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا ٹوئٹر اکاؤنٹ 12 گھنٹے کے لئے بلاک کردیا گیا تھا اور ساتھ ہی انہیں پابندی کی وارننگ بھی دے دی گئی تھی۔

اس حوالہ سے ٹوئٹر انتظامیہ نے کہا تھا کہ امریکی صدر ٹرمپ کے 3 ٹویٹ ڈیلیٹ کیے گئے ہیں اور ان کا اکاؤنٹ 12 گھنٹوں کیلئے بلاک کردیا گیا ہے۔