سپریم کورٹ نے بازار میں تیزی کے دوران سیبی اور سیٹ کو ہوشیار رہنے کی مشورت دی ہے۔

سپریم کورٹ نے بین الاقوامی سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن...

مرکزی حکومت کا الرٹ، وزارت صحت نے تمام ریاستوں کے لیے ایڈوائزری جاری کی

 مہاراشٹرا میں زیكا وائرس کے کچھ کیسز سامنے آنے...

بھارت-منگولیا مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ” میگھالیہ میں شروع

بھارت اور منگولیا کے مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ"...

ہاتھرس حادثے میں جاں بحق افراد کے لیے صدر اور وزیراعظم کی تعزیت

صدر دروپدی مرمو اور وزیراعظم نریندر مودی نے منگل...

راشٹریہ شکشک ایوارڈ کے لیے خود نامزدگی 15 جولائی تک: تعلیم وزارت

راشٹریہ شکشک ایوارڈ 2024 کے لیے اہل اساتذہ سے...

سری نگر تصادم میں 3 دہشت گرد ہلاک، آپریشن جاری

سری نگر میں سال رواں کے دوران سیکیورٹی فورسز اور دہشتگردوں کے درمیان 9 تصادم آرائیاں ہوئیں جن میں 19 دہشت گرد مارے گئے۔

سری نگر: سری نگر کے مضافاتی علاقہ لاوے پورہ میں منگل کی شام سے سیکیورٹی فورسز اور دہشتگردوں کے درمیان جاری تصادم میں 3 دہشت گرد ہلاک ہوئے ہیں۔
کشمیر زون پولیس نے اپنے آفیشل ٹوئٹر ہینڈل پر جانکاری فراہم کرتے ہوئے ایک ٹویٹ میں کہا: ’سری نگر انکاؤنٹر اپ ڈیٹ: مزید دو عدم شناخت دہشت گرد ہلاک، مہلوک دہشتگردوں کی کل تعداد 3، تلاشی آپریشن جاری‘۔
قبل ازیں ذرائع کے مطابق دہشتگردوں کی موجودگی کی مصدقہ اطلاع موصول ہونے پر فوج کی 2 آر آر، سی آر پی ایف اور پولیس کی ایک مشترکہ ٹیم نے سری نگر کے مضافاتی علاقہ لاوے پورہ کو منگل کی شام قریب چھ بجے محاصرے میں لے کر تلاشی آپریشن شروع کر دیا تھا۔
طرفین کے درمیان اس وقت تصادم چھڑ گیا تھا جب تلاشی آپریشن کی ایک ٹیم مشتبہ مقام کے نزدیک پہنچ گئی تھی۔ مذکورہ ذرائع نے بتایا کہ رات کو تاریکی کے پیش نظر آپریشن ملتوی کردیا گیا تھا جس کو بدھ کی علی الصبح بحال کیا گیا۔
دریں اثنا مقامی لوگوں نے یو این آئی کو فون پر بتایا کہ جو لوگ گھروں سے باہر تھے وہ رات کو گھر واپس نہیں لوٹ سکے انہیں باہر اپنی رشتہ داروں اور دوستوں کے ہاں ہی ٹھہرنا پڑا۔
اس تصادم سے سری نگر – بارہمولہ شاہراہ پر ٹریفک متاثر ہوا ہے جس کے پیش نظر بارہمولہ، سوپور اور گلمرگ سے سری نگر جانے والی گاڑیوں کو ماگام – بڈگام راستے سے سری نگر روانہ کیا جا رہا ہے۔
بتادیں کہ پولیس ذرائع کے مطابق لاوے پورہ تصادم کو چھوڑ کر سری نگر میں سال رواں کے دوران سیکیورٹی فورسز اور دہشتگردوں کے درمیان نو تصادم آرائیاں ہوئیں جن میں 19 دہشت گرد مارے گئے۔