سپریم کورٹ نے بازار میں تیزی کے دوران سیبی اور سیٹ کو ہوشیار رہنے کی مشورت دی ہے۔

سپریم کورٹ نے بین الاقوامی سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن...

مرکزی حکومت کا الرٹ، وزارت صحت نے تمام ریاستوں کے لیے ایڈوائزری جاری کی

 مہاراشٹرا میں زیكا وائرس کے کچھ کیسز سامنے آنے...

بھارت-منگولیا مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ” میگھالیہ میں شروع

بھارت اور منگولیا کے مشترکہ فوجی مشق "نومیڈک ایلیفینٹ"...

ہاتھرس حادثے میں جاں بحق افراد کے لیے صدر اور وزیراعظم کی تعزیت

صدر دروپدی مرمو اور وزیراعظم نریندر مودی نے منگل...

راشٹریہ شکشک ایوارڈ کے لیے خود نامزدگی 15 جولائی تک: تعلیم وزارت

راشٹریہ شکشک ایوارڈ 2024 کے لیے اہل اساتذہ سے...

بی جے پی اور آر ایس ایس کا ’’حقیقی ہندو ازم‘‘ سے کوئی تعلق نہیں، یہ لوگ نفرت کے پیامبر ہیں: ممتا بنرجی

جلپائی گوڑی میں ایک عوامی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے ممتا بنرجی نے کہا کہ نفرت انگیز سیاست سے بنگال کو تباہ و برباد کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ بی جے پی اور آر ایس ایس دونوں’’حقیقی ہندو نہیں‘‘ ہیں یہ لوگ صرف نفرت پھیلانے میں یقین رکھتے ہیں۔

کلکتہ: وزیر اعلی ممتا بنرجی نے آج شمالی بنگال کے عوام سے بی جے پی کو نکال باہر کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی کا تعلق بنگال کی ثقافت اور کلچر سے نہیں ہے۔ نفرت انگیز سیاست سے بنگال کو تباہ و برباد کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ ممتا بنرجی نے مزید کہا کہ بی جے پی اور آر ایس ایس دونوں’’حقیقی ہندو نہیں‘‘ ہیں یہ لوگ صرف نفرت پھیلانے میں یقین رکھتے ہیں۔

جلپائی گوڑی میں ایک عوامی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے ممتا بنرجی نے کہا کہ ہم نے گزشتہ دس سالوں میں شمالی بنگال کی ترقی کے لئے بہت کچھ کیا۔ اس کے باوجود ہمیں شمالی بنگال سے ایک بھی سیٹ نہیں ملی۔ باہر سے آنے والی بی جے پی نے تمام سیٹوں پر جیت حاصل کی۔ آخر ہمارا قصور کیا تھا۔ ممتا بنرجی نے کہا کہ آر ایس ایس اور بی جے پی اپنے مخصوص مفاد کے لئے بنگال پر کنٹرول حاصل کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ اصل میں وہ ہندو نہیں ہیں۔ ان کا رام کرشن یا سوامی  ویویکانند کے نظریات اور فکر سے کوئی سروکار نہیں ہے۔ یہ لوگ صرف نفرت پھیلانے میں یقین رکھتے ہیں۔

مغربی بنگال اسمبلی انتخابات 2021 کے اپریل، مئی میں ہونے کے امکانات

ترنمو ل کانگریس کے لیڈروں اور کارکنوں کا حوصلہ بڑھاتے ہوئے کہا کہ مغربی بنگال اسمبلی انتخابات 2021 کے اپریل یا پھر مئی میں ہونے کے امکانات ہیں۔ اس لئے ہمیں شمالی بنگال میں مل کر کام کرنے کی ضرورت ہے۔ ممتا بنرجی شمالی بنگال کے تین روزہ دورے پر ہیں۔ انتخابی حکمت عملی طے کرنے اور ترنمول کانگریس کے لیڈروں، ورکروں سے ملاقات کریں گے۔ جلپائی گوڑی اور علی پوردوار اضلاع کے بوتھ صدور کے ساتھ ایک کور کمیٹی کے ساتھ میٹنگ کریں گی۔

ممتا بنرجی نے کہا کہ بنگال کو بھی گجرات بنانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ آئی پی ایس افسران کو دہلی طلب کرکے ریاست کے معاملات میں مداخلت کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔

شہریت ترمیمی ایکٹ کے نام پر دھوکہ

ممتا بنرجی نے بنگلہ دیش سے آنے والے رفیوجیوں کا اعتماد جیتنے کی کوشش کرتے ہوئے کہا کہ شہریت ترمیمی ایکٹ کے نام پر دھوکہ دیا جارہا ہے۔ ہم نے پہلے ہی اعلان کردیا ہے کہ ریاست میں تمام پناہ گزیں نہ صرف ہندوستانی شہری ہیں بلکہ وہ جس جگہ پر آباد ہیں وہ ان کی ملکیت ہے اور کوئی بھی ان کی زمین نہیں چھین سکتا ہے۔

شمالی بنگال میں گزشتہ لوک سبھا انتخابات میں ممتا بنرجی کو کراری شکست

خیال رہے کہ شمالی بنگال میں لوک سبھا انتخابات میں ممتا بنرجی کو کراری شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ اب ممتا بنرجی دوبارہ اس کو حاصل کرنے کی بھر پور کوشش کر رہی ہیں۔ شمالی بنگال میں کوچ بہار، علی پوردوار، جلپائی گوڑی، دارجلنگ، رائے گنج، بالورگھاٹ، شمالی مالدہ اور جنوبی مالدہ سمیت آٹھ لوک سبھا نشستوں میں سے ممتا بنرجی کی پارٹی ایک بھی سیٹ نہیں جیت سکی۔ 7 سیٹوں پر بی جے پی کو کامیابی ملی اور ایک جنوبی مالدہ کی سیٹ پر کانگریس کے ابو ہاشم خان چودھری نے کامیابی حاصل کی۔

شمالی بنگال کی راج بنشی برادری کا دبدبہ ہے۔ اور شمالی بنگال کے 30 فیصد آبادی ان پر مشتمل ہے۔ شمالی بنگال کی 54 سیٹوں میں سے 50 سیٹوں پر راج بنشی کا اہم کردار ہے۔ ممتا بنرجی ان کے اعتماد کو حاصل کرنے کی بھر پور کوشش کر رہی ہیں۔