دہلی میں راجستھان کے وزیر اعلیٰ کے کمرے میں آگ پر قابو پا لیا گیا

 دہلی کے جودھ پور ہاؤس میں وزیر اعلی بھجن...

بھارت نے نئی نسل کی آکاش میزائل کا کامیاب تجربہ کیا

ڈی آر ڈی او نے نئی نسل کی ’آکاش...

تلنگانہ حکومت نئی برقی پالیسی لانے کا فیصلہ کرتی ہے

تلنگانہ حکومت نے نئی برقی پالیسی لانے کا فیصلہ...

اندرا گاندھی نیشنل اوپن یونیورسٹی میں ایم اے اردو کورس کا آغاز کل سے

اگنو کا شمار دنیا کی بڑی یونیورسٹیوں میں ہوتا ہے۔ 25 جون 2021 اگنو کی تاریخ میں یاد رکھا جائے گا اسی دن اگنو میں ایم اے اردو کورس کا آغاز ہو رہا ہے۔  یہ اگنو کے لئے بھی اور عاشقان اردو کے لئے بھی ایک تاریخی دن ہے۔

نئی دہلی: اندرا گاندھی نیشنل اوپن یونیورسٹی کو عرف عام میں اگنو کے نام سے جانتے ہیں اگنو کا شمار دنیا کی بڑی یونیورسٹیوں میں ہوتا ہے۔ 25 جون 2021 اگنو کی تاریخ میں یاد رکھا جائے گا اسی دن اگنو میں ایم اے اردو کورس کا آغاز ہو رہا ہے۔  یہ اگنو کے لئے بھی اور عاشقان اردو کے لئے بھی ایک تاریخی دن ہے۔

اگنو کے وائس چانسلر پروفیسر ناگیشور راؤ اور اسکول آف ہیومنٹیز کی ڈائریکٹر پروفیسر مالتی ماتھر کی خصوصی کوششوں سے ایم اے اردو کورس کا آغاز ممکن ہو سکا ہے۔ 25 جون کو صبح ساڑھے دس بجے وائس چانسلر پروفیسر ناگیشور راؤ کی صدارت میں افتتاحی پروگرام کا آغاز ہوگا۔ ملک بھر کے عاشقان اردو اور شائقین اردو اگنو کے فیس بک پیج پر اس پروگرام کو لائیو دیکھ سکیں گے۔ یہ جانکاری یہاں جاری ایک پریس ریلیز میں دی گئی۔

ریلیز کے مطابق ہندوستان کی تین اہم علمی شخصیات کو اس افتتاحی سیشن میں مہمان خصوصی بنایا گیا ہے۔ مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی کے سابق وائس چانسلر پروفیسر محمد میاں، کشمیر یونیورسٹی کے موجودہ وائس چانسلر پروفیسر طلعت احمد اور جامعہ ملیہ اسلامیہ کی موجودہ وائس چانسلر پروفیسر نجمہ اختر اس آن لائن افتتاحی اجلاس میں مہمان خصوصی کی حیثیت سے شریک ہوں گے۔ اسکول آف ہیومنٹیز کی بے حد فعال اور متحرک ڈائریکٹر پروفیسر مالتی ماتھر کے استقبالیہ کلمات سے اس پروگرام کا آغاز ہوگا۔ اردو کنسلٹنٹ ڈاکٹر قدسیہ نصیر اس آن لائن افتتاحی سیشن کی نظامت کریں گی اور دوسرے کنسلٹنٹ ڈاکٹر عبد الحفیظ اظہار تشکر فرمائیں گے۔

فاصلاتی نظام تعلیم سے ایم اے اردو کرنے کے خواہشمند افراد کے لئے ایک نادر موقع

ایم اے اردو کا یہ دو سالہ کورس کم از کم دو سال اور زیادہ سے زیادہ چار سال میں مکمل کیا جا سکے گا۔ جولائی اور جنوری دونوں سیشن میں آن لائن داخلہ کی سہولت ہے۔ فاصلاتی نظام تعلیم سے ایم اے اردو کرنے کے خواہشمند افراد کے لئے یہ ایک نادر موقعہ ہے۔

اندرا گاندھی نیشنل اوپن یونیورسٹی میں تعلیمی پروگراموں کے لیے مختلف ذرائع ترسیل کا استعمال کیا جاتا ہے۔ یہاں سے مستقل طور پر اردو کے پروگرام بھی نشر کئے جاتے ہیں۔ اردو کے (Audio Visual) پروگرام بنانے کے لئے اردو داں افراد کا تقرر کیا گیا ہے۔ ایسے افراد جو الکٹرانک میڈیا میں مہارت رکھتے ہوں اور اردو زبان و ادب سے واقف ہوں۔ یہاں سے لائیو (Live) ریڈیو پروگرام بھی نشر کیا جاتا رہا ہے۔ زیادہ تر یونیورسٹی اور کالج سے اردو کے اساتذہ کی خدمات لی جاتی ہیں۔ گیان درشن کے لئے مختلف موضوعات پر سیکڑوں پروگرام بنائے گئے ہیں۔

اندرا گاندھی نیشنل اوپن یونیورسٹی کے 21 اسکولوں میں ایک اسکول، اسکول آف ہیومینیٹیز (انسانی علوم کا اسکول) بھی ہے۔ اسکول میں پڑھائی جانے والی زبانیں انگریزی، ہندی، اردو اور سنسکرت، پنجابی کے علاوہ گیارہ جدید ہندوستانی زبانیں بھی ہیں۔

اندرا گاندھی نیشنل اوپن یونیورسٹی میں نظام یہ ہے کورس میٹیریل تیار کرنے کے لیے باہر کے با صلاحیت افراد کی خدمات لی جاتی ہیں۔ اس کے لیے ملک کی مختلف یونیورسٹیز اور کالج کے اساتذہ سے رابطہ قائم کیا جاتا ہے۔ اگنو کی انتظامیہ اس کے لیے ایک پینل تیار کرتی ہے۔ اس پینل میں کچھ منتخب نام رکھے جاتے ہیں۔ جن کی خدمات وقتاً فوقتاً تدریسی مواد تیار کرنے کے لیے لی جاتی ہیں۔

ملک کے نامور یونیورسٹیز اور کالجز کے اساتذہ سے لی گئی خدمات

موجودہ وقت میں دہلی سے جامعیہ ملیہ اسلامیہ، دہلی یونیورسٹی اور جواہر لعل نہرو یونیورسٹی کے علاوہ ذاکر حسین کالج اور دیگر کالجز کے ان خواتین و حضرات کی خدمات حاصل کی گئی ہیں جو درس و تدریس سے وابسطہ ہیں۔

اس کے علاوہ علی گڑھ مسلم یونیورسٹی، حیدرآباد یونیورسٹی، بہار سینٹرل یونیورسٹی، کولکاتہ یونیورسٹی، بنارس ہندو یونیورسٹی، جموں یونیورسٹی، کاشمیر یونیورسٹی، حیدرآباد سینٹرل یونیورسٹی، مولانا آزاد نیشنل اوپن یو نیورسٹی کے اساتذہ سے بھی رابطہ قائم کیا گیا۔ ان کی خدمات بھی حاصل کی گئیں۔ تاکہ بی اے اور ایم اے کی سطح پر ایک اچھا نصاب تیار ہو سکے اور جو نصاب پہلے سے تیار ہے، ان میں جو غلطیاں رہ گئی ہیں یا ان میں کسی طرح کے ترمیم و اضافے کی جو گنجائش ہے اور پینل کے ایکسپرٹس نے جن کی طرف نشاندہی کی ہے اس کو دور کیا جا سکے۔

جن خواتین و حضرات سے ہم کورس میٹیریل تیار کرنے کے لیے خدمات حاصل کرتے ہیں ہم ان سے رابطے میں رہتے ہیں۔ ان سے بار بار گزارش کرتے رہتے ہیں کہ وہ ہمارے فارمیٹ کے مطابق ہی اسباق لکھیں۔ اردو کی تعلیم اگنو میں جاری و ساری رہے اور ملک کے طول و عرض میں طالب علم اگنو کے ذریعے اردو کی تعلیم حاصل کر سکیں اس کے لیے اگنو انتظامیہ مثبت انداز فکر کے ساتھ تعاون کے لئے ہمہ وقت تیار ہے۔

اگنو کے قیام کے بعد ہی اس بات کی ضرورت محسوس کی جانے لگی تھی کہ اس فاصلاتی نظامِ تعلیم کے تحت اردو زبان و ادب کی بھی تعلیم کا معقول انتظام ہونا چاہیے۔ وقتََا فوقتََا اس کے لیے مانگ بھی اٹھتی رہی۔ بالآخر 2009 میں اندرا گاندھی نیشنل اوپن یونیورسٹی میں اردو زبان و ادب کی تعلیم کا سلسلہ شروع ہوا۔