دہلی میں راجستھان کے وزیر اعلیٰ کے کمرے میں آگ پر قابو پا لیا گیا

 دہلی کے جودھ پور ہاؤس میں وزیر اعلی بھجن...

بھارت نے نئی نسل کی آکاش میزائل کا کامیاب تجربہ کیا

ڈی آر ڈی او نے نئی نسل کی ’آکاش...

تلنگانہ حکومت نئی برقی پالیسی لانے کا فیصلہ کرتی ہے

تلنگانہ حکومت نے نئی برقی پالیسی لانے کا فیصلہ...

نئے عالمی انسداد بدعنوانی قوانین نافذ ہونا شروع، 22 افراد پر پابندیاں عائد، اثاثے منجمد

برطانیہ میں نئے عالمی انسداد بدعنوانی قوانین پر عمل درآمد شروع ہوگیا اور اس کے ساتھ ہی بین الاقوامی کرپشن پر 22 افراد پر پابندیاں عائد اور اثاثے منجمد کردیئے گئے ہیں۔

لندن: برطانیہ میں نئے عالمی انسداد بدعنوانی قوانین پر عمل درآمد شروع ہوگیا اور اس کے ساتھ ہی بین الاقوامی کرپشن پر 22 افراد پر پابندیاں عائد اور اثاثے منجمد کردیئے گئے ہیں۔

خبررساں ایجنسی کے مطابق پابندیوں کا سامنا کرنے والوں کا تعلق روس، جنوبی افریقہ، سوڈان اور لاطینی امریکہ سے ہے، یوروپی یونین سے علیحدگی کے بعد برطانیہ نے اپنے یہ نئے قوانین متعارف کرائے۔

برطانوی وزیر خارجہ نے کہا کہ پابندیوں کا سامنے کرنے والے افراد عالمی سطح پر بڑے کرپشن کیسز میں ملوث ہیں۔ کرپشن سے غریب ملکوں کی دولت ختم ہوجاتی ہے، لوگ غربت میں پھنس جاتے ہیں۔

برطانیہ کی انسانی حقوق سے متعلق پابندیوں کی فہرست میں 78 افراد اور اداروں کے نام شامل ہیں۔ ان کا تعلق روس، سعودی عرب، وینزویلا، پاکستان، میانمار، شمالی کوریا، بیلاروس اور گامبیا سے ہے۔