دہلی میں راجستھان کے وزیر اعلیٰ کے کمرے میں آگ پر قابو پا لیا گیا

 دہلی کے جودھ پور ہاؤس میں وزیر اعلی بھجن...

بھارت نے نئی نسل کی آکاش میزائل کا کامیاب تجربہ کیا

ڈی آر ڈی او نے نئی نسل کی ’آکاش...

تلنگانہ حکومت نئی برقی پالیسی لانے کا فیصلہ کرتی ہے

تلنگانہ حکومت نے نئی برقی پالیسی لانے کا فیصلہ...

بنگال اسمبلی انتخابات: پانچویں مرحلے کی 45 سیٹوں پر ووٹنگ کا آغاز

بنگال اسمبلی انتخابات کے اس اہم مرحلے میں برسراقتدار ترنمول کانگریس کی کارکردگی کو اہم سمجھا جارہا ہے، جس سے طے ہوگا کہ وزیراعلی ممتا بنرجی آئندہ 2 مئی کو مسلسل تیسری مدت کے لئے وزیر اعلی کی حیثیت سے بنگال واپس آئیں گی یا نہیں۔

کولکاتا: مغربی بنگال میں ہفتہ کی صبح سخت حفاظتی انتظام کے درمیان اسمبلی انتخابات کے اہم پانچویں مرحلے کے لئے ووٹنگ کا آغاز ہوا۔ ریاستی اسمبلی کی 294 میں سے 45 نشستوں کے لئے پولنگ آج صبح 7 بجے سے شام 6:30 بجے تک ہوگی۔ اس میں 1.12 کروڑ رائے دہندگان ای وی ایم سے 319 امیدواروں کی قسمت کا فیصلہ کریں گے۔

اس مرحلے میں برسراقتدار ترنمول کانگریس کی کارکردگی کو اہم سمجھا جارہا ہے، جس سے طے ہوگا کہ وزیراعلی ممتا بنرجی آئندہ 2 مئی کو مسلسل تیسری مدت کے لئے وزیر اعلی کی حیثیت سے بنگال واپس آئیں گی یا نہیں۔

ریاست میں پانچویں مرحلے میں چھ اضلاع اور 45 اسمبلی حلقوں میں پولنگ ہوگی۔ جن اضلاع میں پولنگ جاری ہے وہ ہیں شمالی پرگنہ پارٹ ۔1، دارجلنگ، کلیمپونگ، مشرقی وردھمان پارٹ ۔1 اور جلپائی گوڑی۔ ریاست میں ووٹنگ کے پانچویں مرحلے میں، ووٹرز 319 امیدواروں کی قسمت کا فیصلہ کریں گے، جن میں 39 خواتین امیدوار ہیں۔ ووٹنگ میں 1.12 کروڑ رائے دہندگان اپنے حق رائے دہی کا استعمال کریں گے۔ ان میں سے 55.80 لاکھ خواتین اور 234 تیسرے زمرے کے لوگ ہیں، باقی مرد ووٹرز ہیں۔ پولنگ کے لئے 15789 پولنگ اسٹیشن قائم کئے گئے ہیں۔

بنگال میں پانچویں مرحلے میں ووٹنگ آزاد، پرامن اور منصفانہ ہونے کو یقینی بنانے کے لئے سیکیورٹی کے پختہ بندوبست کئے گئے ہیں اور مرکزی اور ریاستی فورس کو تعینات کیا گیا ہے۔ جس میں مرکزی فورسز کی 853 کمپنیاں تعینات کی گئیں ہیں۔ اس مرحلے میں پچھلے مرحلے کی نسبت زیادہ سیکیورٹی فورسز کو تعینات کیا گیا ہے۔ اس سے پہلے چوتھے مرحلے میں 44 نشستوں پر ووٹنگ کے لئے 789 کمپنیوں کو تعینات کیا گیا تھا ۔